اتوار , دسمبر 17 2017
Home / بین الاقوامی / بھارت نے تاج محل کو سیاحتی گائیڈ سے نکال دیا

بھارت نے تاج محل کو سیاحتی گائیڈ سے نکال دیا

ممبئی: بھارتی شہرآگرہ میں واقع دنیا کے سات عجائب میں سے ایک تاج محل کو ثقافتی وراثت کی فہرست میں سے خارج کرنے کے بعد ریاست کی سیاحتی فہرست سے بھی نکال دیا گیا۔

اس سے قبل رواں سال جولائی میں ریاست کے سالانہ بجٹ میں مذہبی وثقافتی مراکزاور شہروں کے فروغ کیلئے ’’ہماری ثقافتی وراثت‘‘ کے نام سے مختص کردہ فنڈ میں بھی بھارت کی اہم ترین عمارت تاج محل کا نام شامل ہی نہیں کیا گیا تھا جبکہ متھرا، ایودھیا اورگورکھپور کے منادر شامل اس فہرست میں شامل تھے کیونکہ ریاست کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ گورکھپورسے ہیں اوروہاں کے گورکھناتھ مندر کے سربراہ بھی ہیں۔

تاج محل سے متعلق اس اقدام کو ریاست کے متعصب وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کی پالیسیوں کے تناظر میں دیکھا جا رہا ہے۔

یوگی آدتیہ ناتھ تاج محل کا ماڈل بھارت کا دورہ کرنے والی اعلیٰ شخصیات کو دینے کے خلاف موقف دے چکے ہیں ۔ یوگی آدتیہ کے مطابق بمہمانوں کو تحفے میں تاج محل یا دوسرے میناروں کا ماڈل دینا ہماری تہذیب سے ہم آہنگ نہیں۔

بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کی تعریف کرتے پوئے یوگی آدتیہ کا کہنا تھاکہ پہلی بار ہم نے دیکھا ہے کہ کوئی بھارتی وزیراعظم ملک سے باہر جائے یا کوئی سربراہ مملکت یہاں آئے تو اسے گیتا اور رامائن تحفے میں دیتے ہیں۔

اس اقدام کے بعد شدید تنقید کا سامنا کرنے پر اتر پردیش کے شعبہ سیاحت نے موقف دیا ہے کہ تاج محل کو نظر انداز نہیں کیا جا رہا، اسے کتابچے میں شامل کیا جائے گا۔

About Web Desk

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے